199

خواتین کو گڈ مارننگ کا پیغام دینا اب مہنگا پڑے گا

خواتین کو گڈ مارننگ کا پیغام دینا اب مہنگا پڑے گا تفصیل جانیے اس رپوٹ میں
سابق رکن قومی اسمبلی کشمالہ طارق نے گڈمارننگ کے پیغام حراسمنٹ میں شمار کیے جانے کے بیان کے وائرل ہونے کی وضاحت کردی کہا ان کے بیان کا ایک حصہ اٹھا کر معاملہ اچھالا گیا نامعلوم افراد کی جانب سے گڈ مارننگ کے میسیجز کی بات کی تھی ساتھ ہی حراسمنٹ کے حوالے سے بھی واضح کردیا کہ کسی ادارے کا سربراہ اگر کھانے یا چائے کی دعوت پر لے جانے کی آفر کرے اور قبول نہ کرنے پر دفتر میں آپ کی پوسٹ سے ہٹادیا جائے تو اسے حراسمنٹ سمجھا جائے گا بیان کے حوالے سے نجی ٹی وی چینلز پر ان کا کہنا تھا:

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں